5

قلم کی آواز , کامران خان

کوئی گلہ نہیں کوئی شکوہ نہیں جب دل میں تیری تمنا نہیں تو پھر کوئی مسئلہ نہیں, آج کل کے حالات اور ہمارے ساتھ پیش آنے والے واقعات, زندگی کس طرح گھومتی ہے اور کس ڈگر جاکر ٹھرتی ہے یہ اگر کسی کو پتہ ہے تو وہ صرف خدا ہے وہی خدا جس نے ماکان و میاکون بنائے جس نے یہ دھرتی سجائی جس نے آسمان بنایا لہلہاتے کھیت اور خوبصورت درخت بنائے جس کی مہربانیوں سے عطاؤں کا سلسلہ چل نکلا اور ہم انسان وجود میں آگئے علم کا ایک سمندر ہے جو کتابوں میں قید ہمارا منتظر ہے جس کی منزل ہم سبھی ہیں جو طلب کئیے جانے کے انتظار میں ہے یہ زندگی جس کی آرزو میں ہم سبھی کھوئے جاتے ہیں سب رشتوں ناطوں سے الگ سفر کررہے ہیں ایک ایسی منزل کی طرف جارہے ہیں جس کا اختتام ہمیں معلوم نہیں ہے ہم کیا کرنا چاہ رہے ہیں ہمیں معلوم نہیں ہے بہرحال ہم چلے جا رہے ہیں ……….

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں