19

قومی کرکٹر محمد عباس کی مریدکے امد

قومی کرکٹر محمد عباس کی مریدکے امد
(حماد علی آرائیں)
قومی ٹیسٹ کرکٹرمحمد عباس گزشتہ روزمریدکے آئے۔ ان کی یہاں آمد کا مقصد اپنے دوست اورکولیگ زمان جمیل سے ملاقات تھا۔ یہ ملاقات سٹارزکالج کے آفس میں ہوئی، کالج کے روحِ رواں سر فلک شیر بھی اس موقع پر موجود تھے۔ ایک نسبتاً بے تکلف اور پرخلوص ماحول کی برکت شامل ہوئی تو27 سالہ محمد عباس نے اپنے جدوجہد سے عبارت سفرزندگی پر روشنی ڈالی۔ بے ساختہ گو نسبتاً کم آمیز محمد عباس بنے تایا کہ کس طرح وہ جیٹھیکے، سمبڑیال میں واقع چھوٹی سی دکان پراپنے والد گرامی کا ہاتھ بٹایا کرتے، والد کے بعد گھر میں بڑا ہونے کے سبب والدین کی ان سے توقعات تھیں جنہیں پورا کرنا لازم تھا، ایسے میں محمد عباس نے ایک لیدر فیکٹری کے علاوہ پراپرٹی آفس میں کام کیا، وہ سمبڑیال ڈرائی پورٹ پر بھی کام کرتے رہے۔ ایک وقت آیا کہ معاشی مشکلات سے عہدہ برآ ہونے کیلئے ملک سے باہر جانے کا سوچا مگرایک مخلص دوست نے ایسا کرنے سے روکا۔ اس کٹھن سفر زندگی کے دوران انہوں نے کرکٹ سے نہ صرف اپنا رابطہ مدہم نہ پڑنے دیا بلکہ خوب دل لگا کے محنت بھی کی۔ اسی دوران انہوں نے قائد اعظم ٹرافی گریڈ ون میں دو بار بہترین کارکردگی دکھائی۔ اللہ تعالیٰ کا فضل ہوا اور انہیں اپریل 2017 میں دورہ ویسٹ انڈیز کیلئے قومی کرکٹ سکواڈ کا حصہ بنا لیا گیا۔ سوئی گیس ڈیپارٹمنٹ کا اثاثہ یہ نوجوان اب تک پانچ ٹیسٹ میچوں میں 23 وکٹیں لے چکے ہیں۔ یہ اگلے ماہ سے شروع ہونے والی پاکستان سپر لیگ میں ملتان سلطان ٹیم کا حصہ ہونگے۔ اس خوشگوارملاقات کے اختتام پر محمد عباس کو سر فلک شیر اور زمان جمیل نے سٹارز کالج کے مختلف سیکشنز کا دورہ کرایا۔ طلبہ نے قومی کرکٹر کو اپنے درمیان پا کر زوردار تالیوں کی صورت خوشی کا اظہار کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں