19

ایم پی اے چودھری خرم اعجاز احمد چھٹہ نے مریدکے میں پہلی جدید لائبریری کا سنگِ بنیاد رکھ دیا

حماد علی آرایئں(شعور نیوز)
ایم پی اے چودھری خرم اعجاز احمد چھٹہ نے مریدکے میں پہلی جدید لائبریری کا سنگِ بنیاد رکھ دیا۔ شیخوپورہ روڈ پر فٹ بال سٹیڈیم کے بالمقابل واقع یہ لائبریری دو کنال پر محیط ہو گی۔ افتتاحی تقریب میں سابق ناظمین پیر فخر السلام، ندیم نواز چھینہ کے علاوہ چودھری شاہ نواز چٹھہ،غلام محیی الدین ،ملک فاروق اعوان ،میڈیا نمائندے اور معززینِ شہر سینکڑوں کی تعداد میں شریک ہوئے۔ لائبریری ساڑھے چھ کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر ہوگی اور ابتدائی طور پر اس میں پانچ ہزار کتابیں رکھی جائیں گی۔ اس کو ای لائبریری کے طور پر دنیا بھر کی بڑی بڑی لائبریریوں کے ساتھ منسلک کرنےکا منصوبہ بھی ماسٹر پلان کا حصہ ہے۔ مردو خواتین کے لیے الگ الگ سیکشن بنیں گے۔ ؔاڈیو ویڈیو سسٹم ،کیفے ٹیریا،ہیٹر، اے سی،جنریٹر اور نگران کیمرے بھی نصب کیے جائیں گے۔ اس سٹیٹ اؔف دی اؔرٹ لائبریری کی تعمیر کے لیے ایک سال کا عرصہ مقرر کیا گیا ہے۔ اس لائبریری کے ڈیزائن میں اس بات کا خیال بھی رکھا جائے گا کہ بر لب سڑک ہونے کے باعث ٹریفک کا شور یہاں مطالعہ کرنے کے لیے اؔنیوالوں کے لیے زحمت کا باعث نہ ہو۔اس لیے عمارت کو سائونڈ پروف بنایا جائے گا۔ واضح رہے کہ قبل ازیں مریدکے کے اندردو سرکاری اور دو غیر سرکاری لائبریریاں موجود ہیں۔ غیر سرکاری لائبریریوں کو چھوڑ کر باقی دونوں گہری بے ثباتی،دیمک اور گرد کی نظر ہو چکی ہیں۔ ان میں ایک بلدیہ مریدکے کی لائبریری ہے اور دوسری ہائیر سیکنڈری سکول کی لائبریری۔ غیر سرکاری لائبریریوں میں بزم اویسیہ اور بزمِ بہارِ مدینہ کی لائبریریاں نسبتآ بہتر حالت میں ہیں مگر ماضی کے مقابلے میں اب وہاں خدمت اور سروس کا وہ معیارباقی نہیں رہا۔ ان لائبریریوں کے لیےنئی کتابوں کی خریداری کا معاملہ بھی کھٹائی میں پڑ چکا ہے۔اس پس منظر میں مریدکےشہر کے اندرعمدہ ،جدید سہولتوں سے مزین لائبریری کا قیام وہ کارنامہ ہے جو دھان پان خرم اعجاز چھٹہ کی سیاست اور شخصیت کو نئی وسعتوں اورمرتبے سے سرفراز کرسکتا ہے۔ اس لائبریری کی ایک اور معنوی حیثیت یہ ہے کہ اس کےشمال میں اللہ کا گھر، جنوب میں فٹ بال اکیڈمی وگرائونڈ، تھوڑا اؔگےبڑھیں تو گورنمنٹ ہائیر سیکنڈری سکول واقع ہے۔ یوں ایک تعلیی ادارے، کھیل کے میدان اور اللہ کے گھر میں گِھری یہ لائبریری اس امر کاحساس دلاتی ہے کہ اگر ہم نے بحیثیت قوم اؔگے بڑھنا ہے تو اس کا راستہ اللہ سے پختہ تعلق ،علم کے حصول،کتاب سے وابستگی اور تفریح کے بامقصد مواقع سے جڑا ہوا ہے۔واضح رہے کہ قبل ازیں منکسرالمزاج خرم اعجاز چٹھہ کے کریڈٹ پر جو نمایاں کارنامے ہیں ان میں ریسکیو 1122،سپیشل بچوں کے لیے شاندار بلڈنگ کی تعمیر،بوائز ڈگری کالج کی نئی بلڈنگ، شہر کے وسط سے گزرنے والی گندے نالے جیسی نہرکے کناروں کی پختہ تعمیر،طلبہ و طالبات کی سہولت کے لیے پنجاب یونیورسٹی سے خصوصی بسیں، لاہور تا کامونکی ترک کمپنی کی اے بس سروس، ریلوے سٹیشن مریدکے کے ساتھ خوبصورت پارک کی تعمیر ایسے خدمت کے وہ کام ہیں کہ جنہیں ان کے بدترین سیاسی مخالف بھی دل سے تسلیم کرتے ہیں۔
اڈیٹر میاں مزمل منیر شعور نیوز

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں