2

دادی کمرے میں بند رکھتی ہے

پریس ریلیز
شعور نیوز
دادی کمرے میں بند رکھتی ہے مار پیٹ کرتی ہے: عائشہ نعمان کا عدالت میں بیان 
ماں سے ملنے کی خواہش پر بھائی حسیب شیخ اور چچا شیخ زیشان سے حراساں کرواتی ہے: پوتی سلطانہ شاہین
مسلم لیگ ن کی ایم پی اے کے ظلم کا شکار 16 سالہ پوتی عائشہ نعمان نے دادی سلطانہ شاہین کا بھانڈا پھوڑ دیا:ن لیگی ایم پی اے سے متعلق شرمناک انکشافات
سول جج ملتان نے ایم پی اے سلطانہ شاہین کی تحویل سے 16 سالہ پوتی عائشہ نعمان کولے کروالدہ کے حوالے کرنے کاحکم دیتے ہوئے والدہ کو5 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے اورمزیدسماعت 10 مارچ تک ملتوی کرنے کاحکم دیاہے۔فاضل عدالت میں ایم پی اے سلطانہ شاہین کی بہو سونیانعمان نے بچوں کی حوالگی کے لئے گذشتہ تقریبا ڈیڑھ سال سے دائر کیس کی سماعت تھی جس میں ایم پی اے کی جانب سے تمام بچوں کوپیش نہ کرنے پر گزشتہ سماعت پر فاضل عدالت نے سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے عدالتی حکم عدولی پر ایم پی اے کے خلاف سخت کارروائی کرنے کی بھی ہدایت کی تھی جس پر گزشتہ روزایم پی اے کی جانب سے بچوں عائشہ نعمان،حرم نعمان اورحسیب شیخ کوعدالت میں پیش کیاگیا۔ اس موقع پر16 سالہ عائشہ نعمان ایک سال اور تین ماہ بعد والدہ سونیا نعمان سے ملی اور والدہ کو دیکھتے ہی پھوٹ پھوٹ کر رو نے لگی۔ عائشہ نعمان نے فاضل عدالت کے روبرو اپنا بیان قلمبند کرواتے ہوئے کہا کہ وہ کسی صورت اپنی دادی ایم پی اے سلطانہ شاہین کے ہمراہ واپس نہیں جائے گی اور اپنی والدہ سونیا نعمان کے ساتھ جاناچاہتی ہے۔ عائشہ نعمان نے بتایا کہ دادی سلطانہ شاہین نہ صرف کمرے میں بند رکھتی ہے بلکہ ماں سے ملنے کی خواہش کا اظہار کرنے پرمار پیٹ کرتی ہے:عائشہ کا کہنا تھا کہ انکے بھائی17 سالہ حسیب شیخ پوری طرح دادی کے شکنجے میں ہیں۔ دادی سلطانہ شاہین اور پھوپیاں انکی ماں سونیا نعمان بارے جھوٹی اور بے بنیاد کہانیاں بنا کر مسلسل کردار کشی کرتی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ دادی و دیگر کی جانب سے سونیا نعمان پر بے جا الزام تراشی اور بہیودہ الزامات کا سلسلہ جاری ہے مگر انکو اپنی والدہ پر مکمل بھروسہ اور ناز ہے۔ انکا کہنا تھا کہ والد شیخ نعمان کے انتقال کے بعد ایم پی اے دادی سلطانہ شاہین نے انکی والدہ کو دھکے مار کر گھر سے نکال دیا اور ان سے سب کچھ چھین لیا حتیٰ کہ ایک ماں
سے اسکے بچوں کو جدا کر دیا گیا۔عائشہ نعمان کا کہنا تھا کہ جب بھی ماں کا نام لیتی دادی اور پھوپیاں چچا شیخ زیشان سے حراساں کرواتیں اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دیتیں: 16 سالہ عائشہ نعمان مسلمل روتی رہی اور فاضل عدالت سے انصاف کی اپیل کرتی رہی: اسکا کہنا تھا کہ وہ اپنی والدہ کے ساتھ رہنا چاہتی ہے لہذا اس کووالدہ کے ساتھ بھجوایا جائے۔ 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں