72

جڑواں شہروں میں 15 روز میں کریم کا دوسرا ڈرائیور بھی قتل کر دیا گیا

جڑواں شہروں میں 15 روز میں کریم کا دوسرا ڈرائیور بھی قتل کر دیا گیا

سجاول امیر کو گزشتہ رات 10:35 منٹ پر گاڈی چھینتے وقت قتل کیا گیا

سجاول امیر ضلع بھکر مقامی اور ملتان کا رہائشی تھا

سجاول نے راولپنڈی میں دیوانہ خاص سے رات دس بجے رائیڈ بک کی

10:35 پر لاکھوا کے قریب گاڑی چھیننے کی کوشش کی گئی

مزاحمت پر کریم کے 22 سالہ ڈرائیور کو قتل کر دیا گیا

راولپنڈی مزاحمت پر سجاول امیر کو گولیاں مار کر زخمی کیا گیا تھا

راولپنڈی نوجوان سجاول امیر نے ہسپتال میں دم توڑا

گاڑی بازیاب کروالی ہے اور مقدمہ درج کر کے تحقیقات جاری ہیں۔ایس ایچ او نصیر آباد

راولپنڈی تھانہ نصیرآباد پولیس نے کریم کمپنی کی مدد سے تحقیقات کا آغاز کر دیا

کریم انتظامیہ کا کہنا ہے کہ پولیس تفتیش کر رہی ہے اور متاثرہ خاندان کی امداد بھی کی جائے گی

کل رات ہسپتال سول لائن میں پوسٹمارٹم کے بعد مقتول کا جنازہ آج شہر بھکر میں کیا جائے گا

دو ڈاکوؤں نے بائیس سالہ ڈرائیور سجاول سے گاڑی چھینی اور مزاحمت پر گولیاں مار دیں

ڈاکو ڈرائیور سے نقدی اور موبائل فونز چھین کر لے گئے جبکہ گاڑی چھوڑ کر فرار ہوئے

ڈرائیور سجاول اسپتال پہنچ کر دم توڑ گیا،ڈاکو چوہڑ چوک گاڑی چھوڑ کر فرار ہو گئے

نصیر آباد پولیس نے گاڑی قبضے میں لے کر ملزمان کی گرفتاری کے لئے چھاپے شروع کر دئیے

مقتول اور گاہک کے موبائل فونز کا ریکارڈ اکٹھا کیا جا رہا ہے،ایس ایچ او نصیر آباد

جلد واقعہ میں ملوث ملزمان کو گرفتار کر لیا جائیگا،انسپکٹر چوھدری اختر

مقتول نوجوان بھکر کا رہائشی تھا مقدمہ گاڑی کے مالک کی مدعیت میں درج کیا گیا،انسپکٹر چوھدری اختر

مقدمہ میں ڈکیتی اور قتل کی دفعہ شامل ہے،انسپکٹر چوھدری اختر

اپنا تبصرہ بھیجیں