81

شام کا منظر نامہ اور پختون تحفظ موومنٹ, کامران خان

کوئی لمحہ نہیں جاتا کہ مسلمانوں پر عرصہ حیات تنگ کیا جارہا ہے, کولڈ وار کا دور ختم ہونے کے بعد ساری دنیا ایک نئی جنگ کا انتظار کر رہی تھی ایک نئی جوستجو ایک نیا پلان جو انسانیت کو تقسیم در تقسیم کرکے تباہ و برباد کردے, انسانیت اپنے وجود پر جس سے شرمندہ ہو اور آج ہم دیکھ رہے ہیں کہ سنی شیعہ کی جنگ آج شام میں انسانیت کا تختہ دار بنی ہوئی ہے ایک اسلامی ملک کے پیچھے امریکہ جبکہ دوسرے کی پشت پر روس موجود ہے, اسلامی ممالک ورطہ حیرت سے تمام صورتحال کا بغور جائزہ لے رہے ہیں, کوئی کیمیکل حملوں کے وجود کو نہیں مانتا کوئی ایران کو شر کی طاقت قرار دیتا ہے اور کوئی سعودی خاندان کو یہودیوں کا دوست قرار دیتا ہے, زندگی نے ہمیں وہ پل بھی دکھائے جب امریکہ نے اعراق پر حملہ کیا اور لائیو یہ پروگرام دیکھتے رہے اور آج دنیا پاکستان اور افغانستان میں ایک نئی دشمنی اور روش پیدا کررہی ہے, پختونوں کو پنجابیوں کے سامنے کھڑا کرنے کی ناکام سازش کی جارہی ہے, پختوں تحفظ محاذ کے سربراہ منظور پختون اپنے لوگوں کی فلاح و بہبود کی بات کر رہے ہیں, وہ فاٹا اور وزیرستان سے فوج کی چیک پوسٹیں ہٹانے کی بات کررہے ہیں, پشاور جلسہ کے بعد پشتون 22 اپریل کو لاہور میں اپنی کمیونٹی کے حقوق کے لئیے جلسہ کررہے ہیں, جہاں تک تحفظ پشتون موومنٹ کے مطالبات کی بات ہے تو پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور کے مطابق وزیراعظم نے پشتونوں کے وطن کارڈ جاری کردئیے ہیں, بہت سی چیک پوسٹیں ختم کردی گئی ہیں جبکہ باقی چیک پوسٹوں کا فیصلہ ملک کے مطابق کیا جائے گا, پشتونوں کی قربانیوں کے حوالے سے پوری قوم میں کوئی شک و شبہ نہیں پایا جاتا, ساری قوم پشتونوں کو سلام پیش کرتی ہے جبکہ اس موومنٹ کی آڑ میں قومیتوں کی لڑائی کو ساری قوم رد کرتی ہے کیونکہ ہم ایک ہیں ہمارا ملک ایک ہمارا ماضی ایک اور ہمارا مستقبل بھی ایک ہے, وزیر داخلہ سرفراز بگٹی نے پشتون بلوچ اتحاد کی بات کرکے کسی قسم کی سازش کو رد کردیا ہے اور چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کراچی میں ناحق قتل ہونے والے پشتون نقیب اللہ محسود کے ورثاء سے تعزیت کرکے یہ پیغام دیا ہے کہ پاک فوج سارے ملک کی فوج ہے جس کا مقصد ملک و قوم کا دفاع اور سلامتی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں